آیئے تعمیرِ نوع کریں ایک برتر پاکستان کے لیے
پاکستان کی سیروسیاحت کا فروغ
Click for English Translation
تحریرو تحقیق زاہد اکرام

Promote ECO Tourism of Pakistan

FB.com/Zahid.Ikram.Official

تاریخی روحانی اور مذہبی سیاحت کو فروغ دیا جائے

جیسا کہ مکہ اور مدینہ سب مسلمانوں کے لئے سب سے مقدس جگہ ہیں، پاکستان کو برکت دی گئی ہےسکھ اور بودہوں کے لئے سب سے مقدس جگہ کے ساتھ. پاکستان کومنفرد طور پر مذہبی سیاحت کا فائدہ اٹھانا چاہیے . سیاح دنیا میں سب سے قدیم تہذیبوں میں سے ایک کے تاریخی ورثہ کا تجربہ کرسکتے ہیں، صوفی مزارین، ہندو مندروں، سکھ گوردواروں اور بودھا ٹیپملز میں عبادت کرسکتے ہیں، دنیا کے کچھ بلند ترین برف پوش پہاڑوں کی پیمائش کریں، یا صرف قدرتی خوبصورتی کا تجربہ کریں، گلگت بلتستان میں، گوادر کے قدیم ساحلوں میں، برف کے پہاڑوں کے پس منظر میں کھلے درختوں سے

اگر فرانس اپنے لوہے کے بنے ایفل ٹاور سے 22 بلین امریکی ڈالر سے زائدسالانہ رقم حاصل کرسکتا ہے تو کیوں پاکستان اپنی روحانی اور مذہبی سیاحت کو فروغ نہیں دے سکتا

بدھ مت کے آثار قدیمہ
پاکستان سکھ اور بدھ مت سیاحوں کے لئے خاص طور پر اہم سائٹ ہے. بدھ مت کی نمائش پاکستان کے سوات وادی میں بہت سے بدھ مت کی یادگاریں اور سٹوپا ہیں، اور جهان آباد میں ایک بدھا کا یادگار مجسمہ ہے. ... تمام بدھ یسٹ گندھارا تہذیب سے خاص طور پر سوات وادی گلگت بلتستان. گاندھارا، اددیہ، پنجاب علاقہ، سندھ اور بلوچستان میں بدھ مت کے آثار قدیما دیکھنے سے محبت کریں گے. . پاکستان میں بدھ مت 2330 سال پہلے ماریان کنگ اشوک کے تحت نمودار ہوئے، جس کے بارے میں نہرو نے یہ کہا تھاکہ یہ کسی بھی بادشاہ یا شہنشاہ سے سے بہتر ہے. بدھ مت پاکستان کے موجودہ دور میں تاریخ کی تاریخ ہے، بھارت - یونانی سلطنت، کوشن سلطنت؛ قدیم بھارت اشال کے عیسائی سلطنت کے ساتھ، پال سلطنت؛ پنجاب کے علاقے، اوردریا سندھ کی وادی ثقافت، آج پاکستان کے اندر موجود ہیں
ٹیکسیلا کے بدھ مت کے سکالر کمارڈرابھ آریادیو، صوواغہ اور نگججنہ کے مقابل تھے.

https://en.wikipedia.org/wiki/Buddhism_in_Pakistan

Holy Sites of Baba Guru Nanak

ایک موقع پر پنجاب تاریخ میں صرف سکھ سلطنت کا مرکز تھا. بابا گرو ناناک کی پیدائش ننکانا صاحب، سکھوں کے لئے سب سے مقدس جگہوں میں سے ایک ہے. امرتسر میں گولڈن مندر کے طور پر بہت سے مذھبی سیاحوں کو متوجہ کرنے کی صلاحیت کے ساتھ ننکانا صاحب ہے. پاکستان کے مندرجہ ذیل شہروں میں واقع سکھوں کے دیگر مقدس مقامات میں ناروال، پشاور، راولپنڈی فیصل آباد . حسن عبدال اسلام آباد اور لاہورشامل ہیں.
در حقیقت، پاکستان میں دنیا بھر میں بہت خوبصورت سبز وشاداب افسانوی پہاڑیوں اور بلندوبالا پہاڑ، تازہ پانی جھیلوں، سلامتی دریاؤں، صحرا، لانگ ساحلوں کے ساتھ سمندر، تاریخی مقامات اور ورثہ، مذہبی مقامات، قدیم فن تعمیر وغیرہ شامل ہیں.
شامل ہیں.

 



پاکستان کی ماحولیاتی سیاحت کو فروغ دیں

ہمارے ملک کی ساحتی دلکشی مھنحو داروسے لے کر ہڑپہ تک کی باقیات، کوہِ ہمالیہ کے پہاڑی سٹیشنز جو موسم سرما کے کھیلوں میں دلچسپی رکھنے والوں کو اپنی طرف متوجہ کرتے ہیں، پاکستان سات ہزار میٹر سے زائد بلند پہاڑی چوٹیوں کا گھر ہے، جو دنیا بھر میں مہم جو کوہ پیما ؤں کو اپنی طرف متوجہ کرتا ہے، خاص طور پر کےٹو۔

شمالی پاکستان میں بہت سے پرانے قلعے ہیں، ہنزا اور چترال وادی میں چھوٹی سی کلاش کمیونٹی کا گھر ہے . تاریخی خیبر پختون خواہ کا رومان وقت کو روکنے والا افسانوی نظارہ ہے،

لاہورپاکستان کا ثقافتی دارالحکومت ہے، جہاں مغلیہ تعمیرات کے بہت ساہکار ہیں جن میں بادشاہی مسجد، شالیمار باغ ، جہانگیرکا مقبرہ اور لاہورکا شاہی قلعہ قابلِ زکر ہیں۔

در حقیقت، پاکستان میں دنیا کی بہت ساری انتہائی خوبصورت سبز و شاداب وادیاں، افسانوی پہاڑیوں اور اونچی چوٹیاں، تازہ پانی لی جھیلیں، سلامتی والے دریا، صحرا، لمبے ساحلوں کے ساتھ سمندر، تاریخی مقامات اور ورثہ، مذہبی مقامات، قدیم آرکیٹیکچر وغیرہ شامل ہیں

ہم بہت سے غیر ملکی اور مقامی سیاحوں کو متوجہ کرتے ہیں. ہمیں واقعی اس صنعت کو فروغ دینے کے لئے سیروسیاحت کی اصلاحات کی ضرورت ہے جس کے لئے ہمیں مندرجہ ذیل اقدامات کرنا ہوں گے:  

پی ٹی ڈی سی کو تمام سیاحوں کے لئے گائیڈ اور سیکورٹی فراہم کرنے کے لئے تمام سیاحتی مقامات پر تربیت یافتہ سیکورٹی افسر ٹورسٹ گائیڈآفیسر مقرر کرنا ہوں گے

ہمیں غیر ملکی سیاحوں کے لئے نرم و آسان ویزا پالیسی، مناسب سیاحتی ویزا فیس اور امیگریشن قواعد بنانا ہوگے.

ہمیں قدرتی ماحولیاتی سیاحت کو فروغ دینے اورخاص طور پر پاکستانی وائلڈ لائف کی دیکھ بھال اور اس کے تحفظ کی کوششوں کی حمایت کرنے کے لئے ہمیں سرسبزوشاداب پاکستان اورقدرتی ماحول کوترقی و ترویج دینا ہو کی

پاکستان آنے کے لئے جہاز، روڈ، ریل اور سمندرسے رسائی فراہم کریں.

سیاحوں کو ورلڈ کلاس آرام دہ اور پرسکون نقل و حمل کی سہولیات اور روڈ نیٹ ورک فراہم کریں

 

مختلف زبانوں میں سیاحوں کی رہنمائی کے لئے گائیڈز کو اچھی تربیت دی جائے

 

نئے راستوں پر زیادہ ٹرین سفاری کی سہولیات فراہم کریں

زیادہ کیبل کار پروجیکٹ لگائیں

ہیلی سفارری کوعام کریں

اونٹوں اور جیپ سفارپز کوپمارے صحرا آؤں میں متحدہ عرب امارات کی طرح متعارف کرایا جائے

سیاحت کو فروغ دینے کے لئے جانوراور پودوں کی خصوصی دیکھ بھال کی جائے

بڑے شہروں اور سیاحتی مقامات کے ارد گرد سیاحوں کے مرکزتعمیر کریں جہاں ہرملائیشیا کی طرح روز آرٹ اور ثقافتی شو پیش کیے جائیں

مقامی اور غیر ملکی سیاحوں کی رہنمائی کے لئے مزید ٹورسٹر انفارمیشن سینٹرز (ٹی آئی سی) قائم کیے جائیں

پی ٹی ڈی سی موٹلز کوورلڈ سٹینڈرڈز کے مطابق سہولیات اور سیاحت کی خدمات کے لئے اپ گریڈ کیا جائے

تمام ہوٹل، موٹلز اور سیاحتی مقامات کی ریزویشن آن لائن رئیل ٹائم میں پرکشش ٹور پیکجز کے ساتھ ہوں

تمام سیاحتی مقامات پر سیاحوں کو محفوظ ٹرانزیکشن کے لئے کریڈٹ / ڈیبٹ کارڈ ادائیگی کی سہولیات فراہم کریں

ہمارے سیاحتی مقامات کو خوبصورت رنگوں سے مزئین کیا جائے

روزانہ ثقافتی رقص و موسیقی کے شوز کا اہتمام کیا جائے

ہمیں بین الاقوامی میڈیا میں اپنی سیاحت کو فروغ دینا چاہیے

سیروسیاحت انڈسٹری سے منسلک چھوٹی سروسز فراہم کنندہ کمپنیاں جن میں ٹرانسپورٹرز ، ہوٹلز اور کھانا پینا فراہم کرنے والوں کو آسان قرض اور پیشہ ورانہ ٹریننگ دئ جائیں

ساحتی مقامات پر مفت عوامی ٹوائلٹ اور باتھ رومزکے قیام اورانکی دیکھ بھال کی زمہ داری حکومت پرہو

ہم کشمیرکی سیاحت کے فروغ کے لئے اوربھارتی پروپیگنڈا کا جواب دینے کے لئے کہ کشمیر انڈیا کا حصہ ہے توجہ طلب مہم کا آغاز کریں

 




پاکستان کی ترقی کے لیے جدید اصلاحات کی فہرست

پاکستان کے لئے سمارٹ ٹیکنالوجی کا استعمال

الیکٹرانک نظامِ حکومت

گاڑیوں کا سستا ترین ٹریکنگ سسٹم

بجلی کی ترسیل میں نقصانات کے کنٹرول کی ٹیکنالوجی

الیکٹرانک روڈ ٹول ٹیکس کی ادائیگی کا نظام

الیکٹرانک ٹریفک کنٹرول سسٹم

دہشت گردی پر الیکٹرانک طائرانہ نظر

سب کیلئے ای موبائل فون کامرس

زندگی کے تمام شعبوں کے لئے صرف ایک شناخت

نئے سیاحتی پوائنٹس کھولیں اور نئے ساحلوں کو تیار کریں

بحرِ بیکراں

Science in Quran

Let's Rebuild & Excel Pakistan

The Holy Quran Exhibition Park

Short Messages

بحرِ بیکراں

ZAHID IKRAM HOME INDEX

FB.com/Zahid.Ikram.Official

1998-2011 CCOL & ZAHID IKRAM